وویجر 1 انسان کا بنایا ہوا پہلا مصنوعی سیارہ ہے جو ہمارے نظام شمسی کی حدود سے پار گیا ہے۔ یہ خلائی سیارہ 1977 میں خلاء میں بھیجا گیا تھا اور آج تک زمین پر سائنسدانوں سے رابطے میں ہے۔

Voyager 1اس سے پہلے وویجر 1 کے انجن 1980 میں چلائے گئے تھے جب یہ زحل کے پاس سے گزر رہا تھا۔ یہ انجن سیارے کو صحیح مدار میں رکھنے میں مدد کرتے ہیں۔ وویجر 1 خلائی سیارے میں چار متبادل انجن لگائے گئے تھے جن کا کام سیارے کے مدار کو ٹھیک کرنا ہے۔

دسمبر 1 کو ںاسا نے یہ متبادل انجن چلنے کی خبر دی تھی۔ جیٹ پروپلشن لیبارٹری کے انجینئروں کے مطابق یہ انجن بلکل ٹھیک کام رہے ہیں اور یہ اس مشن کی مدت کو دو سے تین سال اور بڑھا سکتے ہیں۔ وویجر 1 سے زمین تک پیغام پہنچنے میں 19 گھنٹے اور 35 منٹ لگتے ہیں۔

اس مشن کی ٹیم کا ارادہ ہے کہ جنوری تک ان متبادل انجنوں کو چلنے دیا جائے جس ک بعد یہ سیارہ واپس اصل انجن پر منتقل کر دیا جائے گا۔

Navigation:

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے