Problems with Big Bang Theory

جیسا کہ پہلے مضمون بگ بینگ (Big Bang) تھیوری میں انسان کے بہت سے سوالات کا تزکرا کیا گیا تھا۔ بگ بینگ (Big Bang) تھیوری اس کائنات کے بہت سے پوشیدہ رازوں کا انکشاف تو کرتی ہے پر ساتھ ہی اس میں اور بہت سے سوالات آ جاتے ہیں۔ جیساکہ کائنات کا پھیلنا کیسے شروع ہوا؟

دھکیلنے والا مادہ (Repelling Matter)

ایلن گوتھ (Allen Guth) نےیہ سوال اٹھایا تھا اوریہ کہتے ہوے جواب دیا کہ شروعات میں مادے کا سلوک انسان کی پہنچ میں آج کے مادے سے بہت مختلف تھا۔ یہ کائنات کا اصول ہے کہ عام مادہ دوسرے مادے کو ایک قوت کے ساتھ اپنی طرف کھینچتا ہے اس قوت کو کشش ثقل کہتے ہیں جس کی وجہ سے سب چیزیں زمین پر گرتی ہیں۔ لیکن گوتھ (Allen Guth) نے جو کہا کہ مادہ ایک دوسرے کو دھکیلتا ہے وہ کشش ثقل کے اصول کے خلاف ہے۔ گوتھ (Allen Guth) کے مطابق شروعاتی کائنات اس دھکیلنے والے مادے سے بھری ہو گی جس نے ارد گرد کے سارے مادے کو ایک دوسرے سے الگ کر دیا ہو گا جس کی وجہ سے یہ کائنات پھیلی۔

حرارت میں کمی بیشی (Thermal Fluctuation)

کائنات کے پھیلنے کے بارے میں شروعاتی تھیوریوں کے مطابق کائنات میں سارا مادہ برابر تقسیم ہوا ہو گا لیکن یہ حقیقت نہیں ہے۔ ہماری کہکشایئں اس کائنات کا حصہ ہیں جو کہ ہایئڈروجن کے بادلوں سے بنی ہے جس میں بہت انرجی اور مادہ ہے۔ مادہ کی اس غیر متوازن تقسیم کے مسلے کے بارے میں سٹیفن ہاکنگ (Stephen Hawking) کہتا ہے کہ میرےساتھی جیری گبسن نے یہ تھیوری دی تھی کہ پھیلتی ہوئی کائنات میں حرارت غیر متوزن ہو گی۔ چنانچہ 1982 میں اس نے ایک یہ ترکیب دی تھی کے یہ اس غیر متوازن حرارت سے یہ کہکشائیں بنی ہوں گی۔
ہاکنگ اور اس کے ساتھی کو اس تھیوری کے بارے میں یقین نہیں تھا کہ یہ صحیح ہے کہ نہیں۔ ناسا نے 2011 میں ایک خلائی مشن بھیجا تھا جس کا مقصد کائنات میں مائکرو ویو شعاعوں کا مطالعہ کرنا تھا جو کہ کائنات کی پیدائش سے ہر طرف پھیلی ہوئی ہیں۔ اگر غیر متوازن حرارت موجود ہوئی تو وہ اس خلائی مشن کے ذریعے تصاویر کی شکل میں مل جائیں گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے