Europa: Life supportive moon of Jupiter

حالیہ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ مشتری کے ایک چاند یوروپا پر زندگی کے لیئے سازگار حالات ہو سکتے ہیں۔ یوروپا کی سطح برف سے بنی ہوئی ہے اور اس کے نیچے پانی ہے جو کہ ایک اندازے کے مطابق زمین کے پانی سے بھی زیادہ ہے۔ برف کی سطح اس کے نیچے پانی کو مضر شعاعوں سے بھی محفوظ رکھتی ہے۔

زندگی میں معاون عناصر

یوروپا پر زندگی کے حامی تمام ضروری عناصر پائے جاتے ہیں جیساکہ پانی، نامیاتی کیمیکل، ریڈیائی حرارت اور آکسیجن۔ یہ چاند اپنی ان خصوصیات کی وجہ سے بہت ارسے سے سائنسدانوں کی توجہ کا مرکز رہا ہے۔ یوروپا کے مشتری کے گرد گھومنے کے دوران اس میں تھوڑی لچک پیدا ہوتی ہے جس کی وجہ سے اس میں سے حرارت نکلتی ہے جو اس میں موجود پانی کو جمنے نہیں دیتی۔ چاند کی سطح کے نیچے کوئی آتش فشاں بھی ہو سکتا ہے جو پانی کو برف میں تبدیل ہونے سے روکتا ہو۔

سطح پر جھیلیں

کسی خلائی پروب کو چاند کی برف کی سطح کے نیچے سمندر میں چھوڑا جا سکتا ہے۔ اس سے چاند کی مزید تحقیق اور زندگی کی تلاش میں مدد مل سکتی ہے۔ اس چاند کی سطح پر بھی کچھ پگھلی ہوئی برف سے بنی جھیلیں ہیں۔ زمین پر یہ مشاہدہ کیا گیا ہے کہ جو جھیل ایسے برف پگھلنے کی وجہ سے بنتی ہے وہ ہزاروں سال تک رہتی ہے اسی وجہ سے یہ خیال کیا جاتا ہے کے یوروپا پر بھی نیچے موجود آتش فشانوں کی حرارت کی وجہ سے ایسی جھیلیں بن سکتی ہیں۔

گرم آبی بخارات

سائسدانوں نے یوروپا کے جنوبی کرہ پر زندگی میں معاون ایک اور عنصر تلاش کیا ہے جو کہ گرم آبی بخارات ہیں۔ جب یہ آبی بخارات خلا میں خارج ہوتے ہیں تو ان میں سے مصنوئی سیارہ گزارا جا سکتا ہے جو ان میں موجود مادوں کے بارے میں تحقیقات میں مددگار ہو سکتا ہے۔

ناسا اس چاند کے لیئے مشن کا منصوبہ بنا رہا ہے تا کہ اس چاند کے بارے میں مزید دریافتیں کی جا سکیں۔

Navigation:

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے